Story Of Last Destan Episode 5 In Urdu

Story Of Last Destan Episode 5 In Urdu Ottoman Empire Last Years Story In Urdu & English | Son Destan Episode 5 PakUrdo.com

عوت کا شکریہ ادا کرتے ہیں، لیکن ہم نہیں آ سکتے کیوں؟ مجھے سمجھ نہیں آتی تم کیوں نہیں آ سکتے؟ میرے دادا روز فون کر کے آپ کے بارے میں پوچھتے ہیں۔ اور میں تمہیں لینے آئی ہوں۔ آپ کے کمروں میں ہر چیزتیار ہے۔ یہ مت کہو کہ ہم نہیں آئیں گے۔ اچھا لیکن کیوں؟ جب ہم کل محل میں آئے تمہارے باپ نے ہمیں نکال دیا خالد۔

میرے بابا وہ ایسا شخص نہیں ہے ، کوئی غلط فہمی ہوئی ہوگی۔ پلیز مجھے مت توڑو، چلو ہم کیا جانتے ہیں کہ اگر ہمارا دشمن ہمارے دروازے پر آتا ہے نہ کہ صرف ہمارا دوست اسے واپس نہیں کیا جا سکتا ہمیں واپس نہیں کیا گیا، ہمیں نکال دیا گیا۔ ہم یہاں آرام دہ ہیں۔ اللہ اپ پر رحمت کرے اگر تم نے لڑکی کو بھی باہر نکال دیا تو

بھائی لڑکی کا کیا قصور ہے؟ وہ ہمیں ڈھونڈنے اور گھر لے جانے کے لیے یہاں آئی تھی۔ اس کا مطلب ہے اچھی ساخت اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا کہ میرا بھائی داستان صحیح ہے یا نہیں ماں اس کے لیے اتنا ہی کافی ہے کہ وہ غصے میں آ جائے اور اس کے اندر آرام کر لے کیا یہ میرا بھائی نہیں ہے؟ کافی بہت ہو گیا میرے پیارے بابا دادا کے مہمان کل آئے تھے،

Story Of Last Destan Episode 5 In Urdu

تم جانتے ہو؟ اوہ واقعی؟ پھر وہ کہاں ہیں؟ وہ ٹرین سے اترتے ہی یہاں آئے لیکن آپ نے انہیں باہر نکال دیا ۔ کیا؟ تو یہ اس کا خاندان تھا جو دروازے کے سامنے اس لوفر کے ساتھ تھا۔ وہ بہت ٹوٹ گئے۔ انہوں نے اپنے بابا کو ان کے آنے سے پہلے کھو دیا اور جب یہ بھی ہوا۔ یہ تقدیر الہی ہے ۔ مجھے حسن صاحب کی وفات پر بہت دکھ ہوا ہے۔

اللہ رحمت کرے پھر ہم اپنے دادا کو کیا بتائیں گے؟ میرا مطلب یہ ہے کہ جب وہ جانتا ہے کہ کل جو کچھ ہوا اس کی وجہ سے وہ یہاں نہیں ہیں اور وہ ہیروں کے ساتھ رہ رہے ہیں۔ اللہ ہمیں پھاڑ دے گا۔ تم کیا چاہتے ہو؟ اگر آپ ان لوگوں کو ذہن میں رکھیں جن کے دل آپ نے توڑے ۔ اگر ہم انہیں یہاں شامل کریں۔ نیز اگر آپ دیکھیں کہ وہ کہاں رہتے ہیں

Son Destan Episode 2

تو یہ کتنا برا ہے۔ جس کا مطلب بولوں: اب عظیم یاوز ان تارکین وطن کے قدموں میں جاتا ہے۔ کیا وہ معافی مانگے گا؟ ٹھیک ہے لیکن اس لیے نہیں کہ تم نے مجھے اپنے دادا سے ڈرایا تھا۔ یہ میری محبت کی وجہ سے ہے جس کی وجہ سے میں آپ کا دل نہیں توڑ سکتا ہوں۔ شکریہ داستان جی ماں کیا ہوا؟ تمھارے چہرے ایسے کیوں بکھر رہے ہیں؟

ہم نے سارا دن نوکری کی تلاش کی اور نہ مل سکی اپنے آپ کو پریشان نہ کریں۔ کام لو اس لکڑی کو جلانے کے لیے توڑ دو لیکن میں پیسے نہیں دیتی میں آپ کی ایک ماہ کے لیے ادا کی گئی قیمت واپس کر دوں گی۔ ممکن ٹھیک ہے پھر دیکھتے ہیں۔ بابا آپ سے کچھ کہنا ہے۔ بابا کل ایک مشکل دن تھا۔ اور میں نے سوچا کہ آپ دوسرے لوگ ہیں۔

اور میں نے وہ الفاظ کہے جو آپ کے دل کو توڑ دیتے ہیں۔ مجھے معاف کرنا آؤ تاکہ میں آپ کی مناسب میزبانی کر سکوں اور مجھے معاف کر دے۔ داستان جناب نے اپنی سخاوت کا مظاہرہ کیا اور ہمیں بلانے آئے ہیں۔ اور ہمیں اس حکمت آمیز جواب دینا چاہیے، بیٹے ٹھیک ہے جیسے آپ کی مرضی، ماں لیکن صرف رات کے کھانے کے لیے ہم یہاں آرام دہ ہیں

The Ottoman Empie History

۔ بہت شکریہ خالہ زہرہ ہم شام کو آپ کا انتظار کر رہے ہیں۔ ہم آئیں گے میری بیٹی بہت جلد پاک اُردو ویب سائٹ سے دیکھیں۔۔ کیا ہوا؟ ” کیا ہوا؟ کیا ہوا؟ – میں کہتا ہوں کیا ہوا؟ آپ مجھ سے ناراض ہیں؟ ہاں میں آپ سے ناراض ہوں بھائی کیا ہوگا؟ کیا تم مجھے بھی بازو سے پکڑ کر شاہ سنی کی طرح گھسیٹ لو گے؟ اچھا تم بڑے بھائی ہو۔

اور تم جو کہتے ہو ہم کرتے ہیں لیکن ہمارے لیے کچھ قربانی دو بھائی یہ کیا اعزاز ہے اور یہ فخر کیا ہے؟ بڑا جناب آپ کے قدموں تک آیا اور دیکھوآپ نے کیا کیا۔ اوہ، آدمی نے ہمیں اپنے دروازے سے باہر نکال دیا ، تم کتنی جلدی بھول گئے ؟ میں نہیں بھولا میں کچھ نہیں بھولا،بھائی۔ جس طرح آپ کے بابا کا انتقال ہوا اسی طرح میرے بابا کا بھی انتقال ہوا۔

میں اپنے خاندان کو صرف اس لیے مصیبت میں نہیں رہنے دوں گا کہ آپ نے بابا سے میرے سے وعدہ کیا تھا،بھائی ۔ بہت ہو گیا اب چپ ہو جاو اگر تمہارا باپ تمہاری یہ حالت دیکھتا تو اس کے ظلم سے پھر مر جاتا یہ وقت آپس میں جھگڑنے کا نہیں ہے۔ یہ وقت ایک ساتھ متحد ہونے کا ہے۔ اپنے آپ کودیکھو تمہارے سوا کون ہے؟

ابھی یا تو تم بھائی ہو اور اپنی روٹی کے حصول کے لیے کلہاڑی مارو یا تم غدار ہو جاؤ اور ایک دوسرے کو مارو فیصلہ آپ کا ہے۔ جناب فتح سلیمان اس بستی میں تشریف لائے جب اس نے اس میں ایک درخت بھی نہیں لگایا تھا۔ اس کے پاس جو کچھ تھا وہ اپنی محنت سے کمایا تھا۔ اب وہ اس شہر اور ریاستی سیاست میں سب سے اہم شخص ہیں۔

اب وہ حقوق چھیننے والوں کو سزا دینے کے لیے کونسل میں ایک بل پر کام کر رہے ہیں۔ جناب جس دن ہم آئے تم بازار میں اسی موضوع پر بات کر رہے تھے۔ تو آپ نے سنا غریب تاجر باغی موڈ میں یہ سب دلالوں، ذخیرہ اندوزوں اور بے شرموں کی وجہ سے ہے۔ اور جنہوں نے اپنا پیٹ بھرنے کے لیےروٹی ڈھونڈنے کے لیے اپنے گھر، کھیت اور جانور چھوڑے۔

برے دنوں میں ان کا یہاں حصہ ہے۔ آپ جن کی بات کر رہے ہیں وہ اس ملک کے لوگ ہیں۔ کیا یہ ٹھیک نہیں، مسٹر یاوز؟ میں یہ نہیں کہنا چاہتا تھا۔ کیا آپ دیکھیں گے جناب؟ وہاں کیا ہے؟ کیا آپ مدد کر سکتے ہیں؟ بالکل، آگے بڑھو ہٹو وہ کہاں ہے

Story Of Last Destan Episode 2 In Urdu
Story Of Last Destan Episode 5 In Urdu
Story Of Last Destan Episode 4 In Urdu
Story Of Last Destan Episode 5 In Urdu

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button